Get involved ہمارے ساتھ شامل ہوجائیں۔

پاکستان کونسل برائے امن و یکجہتی کے ویب سائٹ   کا دورہ کرنے پر ہم آپ کو خوش آمدید کہتے ہیں۔

پاکستان اور امن کی صورتحال:

 162عالمی امن کے 2013 کے فہرست کے مطابق دنیا کے

 [i] ممالک میں پاکستان کا نمبر 157 ہے

 اور 2014 کے فہرست کے مطابق پاکستان 162 ممالک میں 154 ویں نمبر پر ہے

اور پاکستان کے بعد آخری ممالک با لترتیب جمہوریہ کانگو، وسطی افریقہ، سوڈان صومالیہ، عراق، جنوبی سوڈان، افغانستان اور سب سے آخر میں شام ہے[ii]۔

 2013 کے فیل سٹیٹس کے لئے ترتیب شدہ 177 ممالک کے فہرست میں پاکستان کا نمبر 13واں ہے[iii]۔

 2013 کے نازک اور لڑکڑاتے ممالک کے 178 ممالک میں پاکستان کا شمار 10ویں نمبر پر ہے[iv]۔

اور سال 2014 میں بھی یہی پوزیشن برقرار رکھی ہے[v]۔

ملک کے اس صورتحال کے پیش نظر ایک رضاکار تنظیم کا قیام عمل میں لایا گیا تاکہ امن کے قیام کے لئے اپنے کوششیں جاری رکھ سکے۔

پاکستان کونسل برائے امن و یکجہتی کیا ہے؟

پاکستان کونسل برائے امن و یکجہتی ایک ملک گیر، رضاکار، آزاد، خود مختار، غیر وابستہ اور جمہوریت پسند تنظیم ہے۔  جو سال 2008 میں قایم ہوئ۔  یہ تنظیم؛

نہ کسی سے پراجیکٹ یا فنڈ لیتی ہے اور نہ کسی کو پراجیکٹ یا فنڈ  دیتی ہے۔

یہ تنظیم بحث مباحثہ کے لئے ایک فورم فراہم کرتی ہے۔ اور عوام و ممبران کو موقع فراہم کرتی ہے کہ وہ آپس میں تعمیری بحث مباحثہ شروع کریں اور امن کو فروغ دینے کے لئے اگاہی اور شعور بیدار کرنے کے کاوشوں میں عوام خصوصاً نوجوانوں ، بزرگوں، خواتین، فنون لطیفہ سے وابستہ افراد اور تنظیموں سے ملکر سر انجام دینا ہے۔

۔  مقامی سطح سے امن کو فروغ دینے کے کوششوں کو شروع کرکے

علاقائ، ملکی اور بین القوامی سطح کی کوششوں کے ساتھ یکجا کرنا ہے۔

پاکستان کونسل برائے امن و یکجہتی کے مقاصد میں یہ بات شامل ہے کہ:

ثقافتی سرگرمیوں جس میں نوجوان نسل، فن سے وابسطہ افراداور طلبہ شامل ہوں کو ترقی دی جائے۔

معاشرے میں نفاق اور عدم برداشت کے بنیادی وجوہات کو جان کر ان  ختم کرنےکے لئے تحریک پیدا کرنا۔

پاکستان کونسل برائے امن و یکجہتی کے مقاصد

مختلف وسائل اور رسائل کی تیاری اور تقسیم۔

امن کے حوالے سے تربیتوں ، مذاکروں، مشاعروں، سیمنار، ریلیوں کا انعقاد۔

امن کے مسائل کو علاقائ اور عالمی مسائل سے منسلک کرنا اور اس پر تحقیق کرنا

جنگوں  اور چڑھائیوں کے خلاف ملک گیر اور عالمی تحریکوں کا حصہ بننا۔

غیر وابسطہ تحریک   کے مقصد کو آگے بڑھانے کے لئے کوشش کرنا اور  پڑوسی ممالک سے دوستانہ روابط کو فروغ دینے کے کوشش کرنا۔

سامراج  مخالف قوموں اور تحریکوں سے یکجہتی کا اظہار کرنا۔

جمہوری خیالات اور  جمہوری عمل کو تقویت دینا۔

معاشرہ میں اور بچوں میں امن کی اہمیت اجاگر کرنے کے لئے سرگرمیاں کرنا۔

افراد کے سطح پر کوشش کرنا کہ امن، برداشت اور عدم تشدد کو فروغ مل سکے۔

آفت کے وقت ریلیف  اور بحالی کے کاموں میں حصہ لینا۔

پاکستان کونسل برائے امن و یکجہتی  کا کون ممبر بن سکتا/ سکتی ہے؟

ہر کوئ جو امن سے پیار کرتا ہو ممبر بن سکتا/ سکتی ہے۔ ماہوار 10 روپے فیس اور امن کے حوالے کوئ بھی کام سرانجام دے سکتی/سکتی ہو۔

بزرگ۔ بزگوں کو کونسل

نوجوان/ طلبہ/ طالبات۔ یوتھ کمیٹی

فن سے وابسطہ افراد، شاعر، ادیب۔ کلچرل کمیٹی

خواتین کمیٹی

آئیں امن کے قیام کے لئے پاکستان کونسل برائے امن و یکجہتی کے ساتھ مل کر کوششوں کو تیز کریں اس   میں ہم سب کی بھلائ ہے۔ممبرشپ فارم کا لینک مندرجہ ذیل ہے۔ فارم کو پُر کرکے ایمیل پر بھیج دیں۔

Membership form in word Doc
Membership form in PDF  
Email: pscpak@gmail.com 

شکریہ

[i] http://www.visionofhumanity.org/pdf/gpi/2013_Global_Peace_Index_Report.pdf

[ii] http://www.visionofhumanity.org/sites/default/files/2014%20Global%20Peace%20Index%20REPORT.pdf

[iii] http://ffp.statesindex.org/rankings-2013-sortable

[iv] http://www.foreignpolicy.com/fragile-states-2014

[v] http://ffp.statesindex.org/rankings-2014